July 04, 2022

Related Articles

One Comment

  1. 1

    Armania Ghazi

    آج ایک نہائت ہی موضوع پر لکھنے کو دل کر رہاہے۔ جیسے کہ آپ سب کو معلوم ہے کہ میری کسی بھی سیاسی پارٹی سےکوئی وابستگی نہیں۔ جس میں جو کچھ بھی دیکھا میں نے برملا اس پر کامنٹ اور پوسٹ کی ہے اسکا یہ مطلب ہرگز نہیں کہ میں صرف سیاستدانوں کے بارے میں نگیٹیو پوسٹ کرنےکی عادی ہوں۔ آج میں نے ایک ایسے نوجوان کے بارے میں پوسٹ کرنے کا ارادہ کیا ہے ۔ جو پچھلے بلدیاتی ایلکشن میں جنرل سیٹ کیلئے پی ایم ایل ن کے صوبائی نائب صدر اور حلقے میں طاقتور پی ٹی آئی اور اے این پی کے امید واروں کے مقابلے میں یک تنہا امید وار تھا۔جس نےمسلم لیگ ن کے صوبائی نائب صدر کو ناکوں چنے چبوائےجسکو پی ایم ایل ن کے صوبے کی نائب صدارت خطرے میں لگنے لگی۔ اسکے لئے کمپیں کرنے والے پی ایم ایل ں کی مشنری اور علاقے حلقے کے اکابرین کی ساری کوشیشیں دم توڑنے لگی تو اسکے گھر کے بالکل پڑوس میں خواتین کا پولینگ سٹیشن اسکی نائب صدارت کو بچانےکے کام آگئی جسمیں ووٹینگ کیلئے آنے والی غریب خواتین کو ووٹ ڈالنے سے اپنےگھر لے جا کربریانی کھلائی بھی اور اسکے گھر پارسل بھی ساتھ دینے کے ساتھ دوہزار روپے جیب ڈالتے ہوئے ووٹ لینے کیلئے قسم لے لئے اور دوسری طرف اس نوجوان کے اپنے پارٹی کےاس حلقے کے واحد رکن نے نه صرف اس نوجوان خدائی گار کے کمپین میں حصہ لینے انکار کیا بلکہ ووٹ بھی پی ایم ایل ن کو دے دیا لعنت ہو اسپر۔یہ نوجوان امید وار خود کمبوں پر چڑھ کر پوسٹر لگانے کے ساتھ ساتھ صرف دونفری کمپیں کے ساتھ پی ایم ایل ن کے نائب صدر کے صدارت کیلئے بڑا خطرہ ثابت ہوا نہائت ہی چھوٹے مارجن سے چیرمین شپ جیت لی لیکن آصل جیت محمد سلیم ماما کی ہوئی کہ جس نے نائب صدر کی صدارت نہ صرف خطرے میں ڈال دی بلکہ پی ٹی آئی اور اے این پی بڑے مارجن سے ہرا کر اپنے پارٹی کی جگہ حلقے میں مستحکم کی۔محمد سلیم ماما وہ شخص ہے جو حلقے سب کی خدمت بغیر کسی سیاسی پارٹی کے وابستگی کی کرتا ہے ۔ اللہ پاک نے اسکی خدمت ہی کے وجہ اسکو یہ مقام دیا اور انشا الله اسکا مستقبل شاندار ہوگا۔

    Reply

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

DMCA.com Protection Status
Ba Khabar Swat Copyright © 2016-2019 All rights reserved. Designed By Kinghost Solutions