Swat

گورنر خیبرپختونخوا کا ہفتہ کے روز سوات کا دورہ

(باخبر سوات ڈاٹ کام)گورنر خیبرپختونخوا فیصل کریم کنڈی نے ہفتہ کے روز سوات کا دورہ کیا اور یونیورسٹی آف سوات کے تیسرے کانووکیشن میں بحیثیت مہمان خصوصی شرکت کی۔ گورنر نے کانووکیشن میں مختلف شعبوں میں تعلیم مکمل کرنیوالے 152 طلبہ میں ڈگریاں تقسیم کیں جبکہ 58 نمایاں پوزیشن ہولڈر طلبہ کو گولڈ میدل پہنائے۔ گورنر خیبرپختونخوا نے یونیورسٹی کے سبزہ زار میں پودا لگا کر شجرکاری مہم کا بھی افتتاح کیا۔ تقریب میں وائس چانسلر ڈاکٹر حسن شیر، سیاسی شخصیات نجم الدین خان، محمد علی شاہ باچا، ڈاکٹر حیدر علی خان، ساجد حسین طوری سمیت طلبہ و طالبات اور والدین و دیگر موجود تھے۔ گورنر خیبرپختونخوا نے تعلیمی کامیابی حاصل کرنیوالے طلبہ و طالبات، والدین اور فیکلٹی اراکین کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ یونیورسٹی آف سوات اپنے پُرفضا ماحول کے باعث منفرد مقام رکھتی ہے۔ سوات یونیورسٹی میں تعلیمی کامیابیوں کا پررونق جشن اس بات کا ثبوت ہے کہ یہاں کے نوجوان تعلیم اور امن کے داعی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سوات کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ یہاں کی بیٹی ملالہ یوسفزئی عالمی نوبل امن انعام حاصل کرنے والی اور دنیا بھر میں تعلیم کی سفیر ہے۔ سوات یونیورسٹی کے تعلیم یافتہ نوجوان دنیا بھر میں اس خوبصورت وادی کے امن اور سیاحت کا پرچار کریں۔ تعلیم یافتہ نوجوانوں نے اپنی اس وادی کے قدرتی وسائل اور سیاحتی مقامات کو دنیا بھر میں متعارف کرانا ہے۔ انہوں نے سوات یونیورسٹی کے فیکلٹی اراکین کو اس وادی کے قدرتی وسائل اور سیاحتی شعبہ پر جدید ریسرچ کرنے کی کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ جدید ریسرچ کو کمرشلائزڈ کرکے یونیورسٹی ریونیو پیدا کرنے کیساتھ عالمی سرمایہ کاروں کو وادی سوات کی جانب راغب کرنے میں مددگار ثابت ہو سکتی ہے۔ سوات یونیورسٹی کو روایتی تعلیم سے ہٹ کر منفرد نظامِ تعلیم پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔

متعلقہ خبریں

تبصرہ کریں